مشروم میں دماغ اور حافظے کے لیے انتہائی مفید مرکب دریافت

مشروم میں دماغ اور حافظے کے لیے انتہائی مفید مرکب دریافت

کوئنز لینڈ| مشروم کے بہت سے فوائد سامنے آتے رہتے ہیں اور اب مشروم میں ایک بالکل نیا جزو دریافت ہوا ہے جو نہ صرف دماغی خلیات (نیورون) کو بڑھاتا ہے بلکہ یادداشت بھی بڑھاتا ہے۔

جامعہ کوئنزلینڈ کے برین انسٹی ٹیوٹ سے وابستہ پروفیسر فریڈرک مینیئرنے کہا ہے کہ انہوں نے ایشیا، شمالی امریکا اور یورپ میں پائے جانے والے لائنز مین مشروم (ہریسئیم ایرینیکیئس) میں ایک نیا مرکب دریافت کیا ہے جو پہلے ہی چینی ادویہ سازی میں استعمال ہوتا رہا ہے۔

اس خوشنما اور خوش ذائقہ مشروم میں دماغی عصبیات کو بڑھانے اور یادداشت کو تقویت دینے والا اہم جزو دریافت ہوا ہے بلکہ یہ نیورونز کو بھی بڑھاتا ہے۔ مشروم سے نکالے گئے اس جزو کو کلچر شدہ دماغی خلیات پر ڈالا گیا تو اعصابی خلیات میں اضافہ دیکھا گیا۔ یہ اضافہ خلیات کے اس حصے میں دیکھا گیا جو اطراف کا ماحول محسوس کرتے ہیں اور آپس میں روابط بناتے ہیں۔

ماہرین کے مطابق اس مشروم کے استعمال سے یادداشت اور دماغ کو بہت فائدہ ہوسکتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں