urdu poetry in urdu text

دو لائن اردو شاعری کاپی پیسٹ

یہ بھی ہو سکتا ہے کل زہر میسر ہی نہ ہو،
ہم نے اس خوف سے کچھ سانپ بھی پال رکھے ہیں.

مجھے اپنے مرنے کا غم نہیں لیکن
ہائے !میں تجھ سے بچھڑجاؤں گا۔

بہتر ہے خود رفو گری سیکھوں کہ آج تو
گھاؤ کھلے ہی چھوڑ کے وہ چارہ گر گیا!

میں خود کو تجھ سے مٹاؤں گا احتیاط کے ساتھ
تُو بس نشان لگا دے ___ جہاں جہاں ہوں میں

میری موت کے دن نزدیک ہیں۔۔۔
تم ناراضگی میں کمی کرو۔۔۔۔

خود کو یکسر تباہ کر کے
اب میں انتقال کرنا چاہوں گا

‏ﺩﺭﺩ ﻗﺴﻄـــــــﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﮐﯿﻮﮞ ﻧﮩﯿـــــــﮟ ﻣﻠﺘﺎ
ﯾﮧ ﻣﺴﻠﺴـــــــﻞ ﺗﻮ ﻣـــــــﺎﺭ ﮈﺍﻟـــــــﮯ ﮔﺎ

سب چھوڑتے جا رہے ھیں آج کل ہمیں
اے زندگی تجھے بھی اجازت ہے جا عیش کر

ﺣﯿﺮﺍﻥ ﮨﻮﮞ ﮐﮧ ﺍِﮎ ﺑﮭﯽ ﮔﻮﺍﮨﯽ ﻧﮧ ﻣﻞ ﺳﮑﯽ
ﺣﺎﻻﻧﮑﮧ ﺍِﮎ ﮨﺠﻮﻡ ﻣﯿﮟ ﻣﺎﺭﺍ ﮔﯿﺎ ﻣﺠﮭﮯ

اِک قِصَّہ اُڑتے—— پَتُّوں کَا
جو سَبزرُتُّوں میں خَاک ہُوئے
اِک نُوحَہ شَہد کے چھَتُّوں کا
جوفَصلِ گُل میں رَاکھ ہُوئے
کُچھ بَاتیں اَیسِی رِشتُوں کِی
جو بِیچ نَگَر میں ٹُوٹ گَئے
کُچھ یَادیں اَیسے ہَاتھوں کِی
جوبِیچ بھَنور میں چھُوٹ گَئے
تُم دَشتِ طَلَب میں ٹھَہر گَٰئے
ھَم قَریَہ ءِ جَاں کے پَار گَٰئے
یِہ بَازِی جَان کِی بَازِی ہے
تُم جِیت گَئے ہم ہار گَئے

جب چھوڑ گیا تب دیکھا اپنی آنکھوں کا رنگ۔
حیران الگ پریشان الگ، ویران الگ، بیابان الگ۔

‏میں بگڑ جاوں تو اپنا بهی نہیں
آپ نےکیسے سمجھ لیا آپ کا ہوں میں۔

‏روز آنســــــو کما کــــــے لاتا هوں۔۔۔
بہت ســــــاده ھے کاروبار مــــــیرا۔۔۔

‏فــــــکر کرنی چھــــــوڈ دی دونوں نے
اس نــــــے میری اور میں نــــــے اپنی

اپنا تبصرہ بھیجیں